Pages

Mustafa ke paley hain hum Bareilly walay hain in urdu lyrics


مصطفیٰ کے پالے ہیں ہم بریلی والے ہیں دل سے بھولے بھالے ہیں ہم بریلی والے ہیں دم رضا کا بھرتے ہیں۔ ہم بریلی والے ہیں خواجہ خواجہ کرتے ہیں ہم بریلی والے ہیں نعت مصطفی پڑھکر ذکرِ اولیاء کر کے چھٹھی ہم مناتے ہیں ہم بریلی والے ہیں مسلک معین الدیں ہی رضا کا مسلک ہے سبکو يے بتاتے ہیں ہم بریلی والے ہیں مسلکِ رضا سے ہر باطل قوم چِڑتی ہے حق پر ہیں جو کہتے ہیں ہم بریلی والے ہیں رنگ و نسل سے ہم پر دھاک نہ جماٶ تم گورے ہیں یا کالے ہیں ہم بریلی والے ہیں سنّیت کے جتنے بھی دہر میں سَلاسِل ہیں اِن سبھی کے نعرے ہیں ہم بریلی والے ہیں ڈگمگا نہیں سکتے مثلِ صلحِ کلی ہم مُستحکم عقیدے ہیں ہم بریلی والے ہیں صدیق و عمر ، عثماں ، مرتضیٰ بھی ہیں اپنے ہرسُو بول بالے ہیں ہم بریلی والے ہیں خادمِ صحابہ ہیں ہم گداۓ اہلِ بیت اعتدال والے ہیں ہم بریلی والے ہیں غوث کے ہیں شیداٸی اشرف کے ہیں مَتوالے خواجہ کے دِوانے ہیں ہم بریلی والے ہیں دعوٸ حُبّ خواجہ رافضی کا جھوٹا ہے خواجہ بس ہمارے ہیں ہم بریلی والے ہیں حامد و رضا ، نوری سے جُڑا ہے دل کا تار اِن سے دل کے رشتے ہیں ہم بریلی والے ہیں مَکرِ "طاہر" پر "اختر" نے یہ اُس سے فرمایا رستے دیکھے بھالے ہیں ہم بریلی والے ہیں سنّیوں کے رہبر ہیں "علامہ" و "عسجد" اب یہ دونوں بھی کہتے ہیں ہم بریلی والے ہیں دنیا کے کسی خِطّے سے تعلّق ہو لیکن سب یہی پُکارے ہیں ہم بریلی والے ہیں
سِیم و زَر کی لالچ میں بیچتے ہیں وہ ایماں
سَودے میں خسارے ہیں ہم بریلی والے ہیں

ظلمت کے تَلاطُم کا ہم کو کچھ نہیں کھٹکا
نور ہیں اُجالے ہیں ہم بریلی والے ہیں

دہشتِ رضا ہم نے دیکھی وہ مجاور میں
شکرِ حق بجاتے ہیں ہم بریلی والے ہیں

باطلوں سے کہہ دیجے چھیڑے نہ ہمیں ایوبؔ
اعلیٰ حضرت والے ہیں ہم بریلی والے ہیں

✍🏻از محمد ایوب رضا امجدی کولکاتہ


Post a Comment

Please have any doubts, please let me know
Post a Comment